Very Sad Shayari By Ishal Fatima

” سرخ آندھی “

خوابوں کے سمے بیت گئے

تتلیوں کی کہانی ختم ہوئی

پھولوں سے اڑی خوشبو

اور دھنک فضا میں بکھر گئی

سانسوں کے ساتھ ساری سسکیاں

معدوم ہوئیں لرزتے ہونٹ ساکت ہوئے

اشکوں کی روانی ختم ہوئی

کوئی ہلچل نہ مچی

اور نہ ہی کوئی ” سرخ آندھی ” چلی

کوئی آنکھ بھی پر نم نہ ہوئی

کتنی خاموشی سے یہ زندگانی ختم ہوئی

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *